’امریکہ پاکستان میں یکطرفہ کارروائی کا ارادہ نہیں رکھتا‘

بیان میں کہا گیا ہے کہ امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی ٹویٹ کے بعد سے دونوں ممالک کے حالات کشیدہ ہونے کے بعد گذشتہ ایک ہفتے کے دوران بّری فوج کے سربراہ جنرل قمر جاوید باجوہ کو کمانڈر امریکی سینٹرل کمانڈ جنرل جوزف ایل ووٹل اور ایک امریکی سینیٹر نے فون پر بات کی ہے۔ تاہم بیان میں امریکہ سینیٹر کا نام ظاہر نہیں کیا گیا ہے۔

بیان میں کہا گیا ہے کہ جنرل جوزف نے جنرل باجوہ کو کوالیشن سپورٹ فنڈ کے حوالے سے کیے گئے فیصلے کے بارے میں آگاہ کیا۔

انھوں نے جنرل باجوہ کو بتایا کہ امریکہ دہشت گردی کے خلاف جنگ میں پاکستان کے کردار کو سراہتے ہیں اور امید کرتے ہیں کہ دونوں ممالک میں کشیدگی عارضی ہے۔

کمانڈر امریکی سینٹرل کمانڈ جنرل جوزف ایل ووٹل نے پاکستان کو بتایا کہ امریکہ پاکستان میں کسی قسم کا یکطرفہ کارروائی کے بارے میں نہیں سوچ رہا۔ تاہم انھوں نے کہا کہ پاکستان کو ان افغان شہریوں کے خلاف کارروائی کرنی ہو گی جو امریکہ کے خیال میں افغانستان میں حملے کے لیے پاکستانی زمین استعمال کرتے ہیں۔

بیان میں کہا گیا ہے کہ امریکی جنرل نے مزید کہا کہ امریکہ میں اس سوچ کے باعث دہشت گردی کے خلاف جنگ میں پاکستان کی خدمات پس منظر میں چلی گئی ہیں۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

گذشتہ شمارے