نقیب قتل کیس: سپریم کورٹ کے حکم پر راؤ انوار کو گرفتار کر لیا گیا

نقیب اللہ محسود قتل کیس میں سپریم کورٹ نے سابق ایس ایس پی ملیر راؤ انوار کی حفاظتی ضمانت کی درخواست مسترد کر دی، عدالتی حکم پر راؤ انوار کو گرفتار کر لیا گیا۔ چیف جسٹس نے ریمارکس دیئے کہ آپ اتنے دلیرہیں، لوگوں کو گرفتار کرتے رہے، خود کہاں چھپے رہے؟۔

چیف جسٹس میاں ثاقب نثار کی سربراہی میں تین رکنی بینج نے کیس کی سماعت کی۔ سابق ایس ایس پی ملیر راؤ انوار اچانک سپریم کورٹ میں پیش ہوئے۔ راؤ انوار نے کہا عدالت کے سامنے سرنڈر کرتا ہوں جس پر چیف جسٹس نے کہا سرنڈر کر کے احسان نہیں کیا۔ سپریم کورٹ نے ایڈیشنل آئی جی سندھ آفتاب پٹھان کی سربراہی میں 5 رکنی تحقیقاتی کمیٹی بنا دی جس میں ڈاکٹر رضوان ، ولی اللہ اور ذوالفقار لاڑک شامل ہیں۔ عدالت نے حکم دیا کہ راؤ انوار کا نام ای سی ایل میں رکھا جائے، انکے منجمد اکاؤنٹس کھول دیئے جائیں۔

 

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

گذشتہ شمارے